300-320 certification material 1Z0-061 book CCBA course 98-367 software tutorial

حسن مصیبت بن گیا ، شیخوپورہ کی ایک خوبرو لڑکی ایسی مصیبت میں پھنس گئی کہ آپ یقین نہیں کریں گے - Forikhabar
جمعرات‬‮   9   اپریل‬‮   2020


حسن مصیبت بن گیا ، شیخوپورہ کی ایک خوبرو لڑکی ایسی مصیبت میں پھنس گئی کہ آپ یقین نہیں کریں گے


شیخوپورہ (ویب ڈیسک) شیخوپورہ میں دوستی سے انکار پر پولیس اہلکار نے خاتون کو اغوا کرکے زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا، پولیس عدالتی احکامات کے باوجود پیٹی بھائی کی گرفتاری سے گریزاں ہے۔ نجی ٹی وی 92 نیوز کے مطابق متاثرہ خاتون نے الزام عائد کیا ہے کہ پولیس اہلکار نے ساتھی کے ساتھ مل کراغوا

کے بعد زیادتی کا نشانہ بنایا، تھانہ صدر کے مقدمہ درج کرنے کے انکار پر خاتون عدالت پہنچ گئی ،عدالتی احکامات پر پولیس نے اہلکار کے خلاف مقدمہ تو درج کرلیا تاہم اس کی گرفتاری سے گریزاں ہے۔ متاثرہ خاتون کا کہنا ہے کہ جب وہ تھانے جاتی ہے تو تھانے میں موجود اہلکار خاتون کو گالیاں دیتا ہے اور صلح کے لئے مجبور کیا جاتا ہے ،خاتون نے وزیراعلیٰ پنجاب سے مطالبہ کیاہے کہ اسے انصاف فراہم کیا جائے اگر انصاف فراہم نہ کیا گیا تو وہ خودکشی کرکے اپنی زندگی کا خاتمہ کرلے گی۔ تفصیلات کے مطابق خاتون نے موقف اختیار کیاہے کہ وہ فیکٹری میں کام کرنے کیلئے جاتی تھی تو ندیم گجر اسے تنگ کرتا تھا تاہم دوستی سے انکار پر ملزم نے اسے ساتھی کے ساتھ مل کر اغواءکیا اور مکان میں لے جا کر مبینہ زیادتی کا نشانہ بنایا جبکہ وہ اسے زبردستی شراب بھی پلا تا رہا اور جب وہ مقدمہ درج کروانے کیلئے تھانہ صدر میں گئی تو پولیس نے کارروائی سے انکار کر دیا اور اسے دھکے مار کر تھانے سے نکال دیا ۔خاتون نے مقدمہ درج کرنے سے انکار کے بعد عدالت سے رجوع کیا جس کے بعد ملزم کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیاہے۔ نجی ٹی وی کا کہناہے کہ ابھی تک متعلقہ شخص کو گرفتار نہیں کیا گیاہے اور نہ ہی اس کی تلاش کی جارہی ہے ۔ نجی ٹی وی 92 نیوز کا کہناہے کہ خاتون نے موقف اختیار کیاہے کہ وہ جب رپورٹ درج کروانے کیلئے تھانے میں گئیں تو پولیس نے اس واقعہ کو ماننے سے ہی انکار کر دیا اور دوبارہ ملزم کے سامنے بیٹھا دیا جو کہ پولیس اہلکاروں کے سامنے اسے گالیاں دیتا رہا ، تفتیشی افسر نے دھکے مار کر خاتون کو تھانے سے نکال کر دیا جس کے بعد خاتون نے میڈیکل کروایا جس میں زیادتی ثابت ہوئی اور عدالت نے اسی رپورٹ کے تحت مقدمہ درج کرنے کا حکم دیا ۔ڈی پی او شیخوپورہ غازی صلاح الدین نے واقعہ پر موقف دیتے ہوئے کہا کہ یہ تاثر درست کرنا ضروری ہے کہ اس میں کیس میں جسے ملزم قرار دیا گیاہے وہ دراصل پولیس اہلکار نہیں ہے ، یہ ایک پرائیوٹ شخص ہے جس کا پولیس سے کوئی تعلق نہیں ہے ، خاتون نے الزام لگایا ہے کہ یہ پولیس اہلکار ہے ۔اس خاتون نے درخواست دی تھی جس پر انکوائری بھی ہوئی اور یہ وقوعہ جھوٹا ثابت ہوا تھا ، خاتون اور ملزم کافی عرصہ سے ایک دوسرے کو جانتے ہیں ، پہلے بھی ایک دوسرے کے خلاف درخواستیں دیتے رہتے ہیں ، مقدمہ درج ہونے کے بعد تفتیش جاری ہے ملزم عبوری ضمانت پر ہے اور میڈیکل ہوچکا ہے ، میرٹ پر تفتیش ہو گی ، اس وقت کہہ دینا کہ زیادتی ہوئی ہے یہ قبل از وقت ہو گا۔


اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں


تازہ ترین ویڈیو
کوہلی کی غصے سے گرائونڈ میں داخل ہونے کی کوشش...
بھارتیوجھوٹ بولنابندکرو،آپ نے پاکستان کاکوئی ایف 16نہیں گرایا...
Most Beautiful Azan -Mashallah

دلچسپ و عجیب

صحت

Forikhabar
            
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ نیوز محفوظ ہیں۔
Copyright © 2020 forikhabar.com All Rights Reserved